سابق وزیراعظم کی کرپشن کی شفاف تحقیقات کی جائیں گی، خواجہ آصف

وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے منی لانڈرنگ، بدعنوانی اور بے ضابطگیوں کی شفاف طریقے سے تحقیقات آئین اور قانون کے مطابق کی جائیں گی۔

بدھ کو اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عمران خان نے غیر ملکی معززین کی طرف سے تحفے میں دی گئی قیمتی گھڑی فروخت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دور میں ریکارڈ کرپشن کی گئی۔ تاہم انہوں نے عمران خان کے پاکستان اور ملک سے باہر کی عدالت میں مقدمہ دائر کرنے کے اعلان کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ اس معاملے کی جانچ صاف عدالتی عمل کے ذریعے کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اب عمران خان کو قوم کو اپنے کرتوتوں کا جواب دینا ہو گا۔

وزیر دفاع نے کہا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو معمولی رقم ڈکلیئر نہ کرنے پر نااہل کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ گھڑی کی فروخت سے حاصل ہونے والی رقم کا اعلان نہ کرنے پر عمران خان کے ساتھ بھی ایسا ہی سلوک ہونا چاہیے۔

موجودہ حکومت کے تحت سیاسی آزادیوں کے حوالے سے خواجہ آصف نے کہا کہ جب سے مسلم لیگ (ن) اور اس کے اتحادیوں نے آٹھ ماہ قبل ملک میں اقتدار سنبھالا ہے تب سے ملک میں کوئی سیاسی قیدی نہیں ہے۔ دوسری جانب عمران خان کے دور حکومت میں نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز، سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی بہن سمیت سیاسی رہنما جیلوں میں بند تھے۔ انہوں نے کہا کہ مخلوط حکومت سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button