سپیکر نے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس ملتوی کر دیا۔

قومی اسمبلی کے سپیکر راجہ پرویز اشرف نے بدھ کے روز ایک بار پھر پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس جو آج (جمعرات) ہونا تھا کوئی وجہ بتائے بغیر مزید ایک ماہ کے لیے ملتوی کر دیا کیونکہ ایک سرکاری اعلان کے مطابق اب پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کا اجلاس ہوگا۔ 20 دسمبر کو

اس سلسلے میں نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ اسپیکر نے اپنے "پارلیمنٹ (جوائنٹ سیٹنگز) رولز 1973 کے رول 4 کے تحت دیئے گئے اختیارات” کا استعمال کرتے ہوئے مشترکہ اجلاس میں تاخیر کی۔

یہ پانچواں موقع ہے کہ اسپیکر نے مشترکہ اجلاس جو 26 مئی کو صدر ڈاکٹر عارف علوی نے بلایا تھا، بغیر کوئی وجہ بتائے ملتوی کیا۔

پارلیمنٹ کا آخری مشترکہ اجلاس 11 اکتوبر کو ہوا تھا جس میں حکومت نے معمول کے مطابق قانون سازی کا کام کیا تھا اور تین بلوں کو ڈسلیسیا اسپیشل میژرز بل 2022، ٹریڈ آرگنائزیشنز (ترمیمی) بل 2022 اور اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری ڈومیسٹک ورکرز بل 2022 منظور کیا تھا۔ کام مکمل ہونے کے بعد سپیکر نے مشترکہ اجلاس ملتوی کرنے کے بجائے 18 نومبر تک ملتوی کرنے کا اعلان کر دیا۔

تاہم، 6 اکتوبر کو، حکومت نے لازمی صدارتی خطاب کے لیے ایک خصوصی مشترکہ اجلاس بلایا اور ڈاکٹر علوی نے خزانہ اور اپوزیشن اراکین کے بائیکاٹ کے درمیان اپنی تقریر کی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button