ملک نادہندہ ہوا تو قومی سلامتی پر سمجھوتہ کرنا پڑے گا، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرپرسن عمران خان نے جمعرات کو متنبہ کیا کہ اگر پاکستان ڈیفالٹ کرتا ہے تو اگلی بار جب حکومت امداد کے لیے غیر ملکی قرض دہندگان سے رجوع کرے گی تو اسے "اپنی قومی سلامتی پر سمجھوتہ” کرنا پڑے گا۔

یاد کرتے ہوئے کہ اس سال کے شروع میں جب وہ اقتدار میں تھے تو ملک کا ڈیفالٹ خطرہ "صرف 5 فیصد” تھا، عمران نے کہا کہ موجودہ حکومت نے "معیشت کو تباہ کر دیا ہے”۔

انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت کی طرف سے کیے جانے والے تمام اقدامات بشمول آرمی ایکٹ میں تبدیلیاں اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ موجودہ لیڈر اپنی ‘لوٹی ہوئی دولت’ کی حفاظت کر سکیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ایک موقع ہے کہ موجودہ لیڈر ملک سے "ایک بار پھر” بھاگ جائیں گے اور وہ "یہ سب اپنے لیے کر رہے ہیں، نہ کہ ملک یا اس کے لوگوں کے لیے”۔

آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے اپنے مطالبے کا اعادہ کرتے ہوئے، عمران نے کہا کہ یہ ملک کے لیے آگے بڑھنے کا واحد راستہ ہے۔ سابق وزیر اعظم نے کہا، "پی ٹی آئی نے 70 فیصد انتخابات میں کامیابی حاصل کی اس حقیقت کے باوجود کہ اسٹیبلشمنٹ ان کی حمایت کر رہی تھی۔”

انہوں نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ اس کا مقصد ’’عمران خان کو ختم کرنا‘‘ ہے۔

پی ٹی آئی کی چیئرپرسن نے یہ بھی کہا کہ یہ ملک کی تاریخ کا "ایک اہم لمحہ تھا” اور "جب قوم کھڑی ہوتی ہے تو وہ روک نہیں پاتے”۔

پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل اسد عمر نے جمعرات کو کہا کہ پارٹی راولپنڈی میں "اب تک کا سب سے بڑا” سیاسی اجتماع منعقد کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کو دھمکیاں نہیں دی جائیں گی اور نہ ہی جھکیں گے اور اس کے رہنما "اپنے حامیوں کے ساتھ کھڑے ہوں گے” اور "بلٹ پروف شیشے” کے پیچھے نہیں چھپیں گے۔

عمر نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ پارٹی کے چیئرمین عمران خان نے "عوام کے لیے سستا تیل” خریدنے کے لیے روس کا دورہ کیا تھا اور تمام انتباہات کے باوجود دورہ جاری رکھا تھا۔

"عمران کو مشورہ دیا گیا تھا کہ اگر وہ روس کا دورہ کریں گے تو طاقت والے ان کے خلاف ہو جائیں گے، لیکن انہوں نے ملک کی بہتری کے لیے انتباہات کو نظر انداز کر دیا۔”

بدھ کے روز قبل ازیں ایک ٹویٹ میں عمر نے بتایا تھا کہ عمران ہفتہ کو راولپنڈی میں حقی آزادی مارچ کی آمد کی تاریخ کا اعلان کریں گے۔

پارٹی سربراہ اور سابق وزیر اعظم راولپنڈی میں مارچ میں شامل ہونے اور پی ٹی آئی کے حامیوں کی قیادت کرنے والے ہیں۔

مزید، عمر نے کہا کہ عمران کو گرانے کی "ناکام کوشش” میں، پورے ملک کو نیچے لایا جا رہا ہے۔

پی ٹی آئی کا لانگ مارچ

پی ٹی آئی کے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ کے مطابق پی ٹی آئی رہنما آج جہلم کے دینہ، خوشاب کے قائد آباد، پشاور اور چکدرہ میں مارچ کی قیادت کر رہے ہیں۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button