اقوام متحدہ کی کمیٹی نے حق خود ارادیت کی توثیق کے لیے متفقہ طور پر پاک سپانسر کردہ قرارداد منظور کر لی

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی ایک اہم کمیٹی نے پاکستان کے زیر اہتمام ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کی ہے، جس میں ان لوگوں کے حق خود ارادیت کی توثیق کی گئی ہے جو نوآبادیاتی، غیر ملکی اور غیر ملکی قبضے کا شکار ہیں۔

پاکستان کی طرف سے پیش کی گئی اور 72 ممالک کی جانب سے مشترکہ سرپرستی میں پیش کی گئی قرارداد کو 193 رکنی اسمبلی کی تیسری کمیٹی میں بغیر ووٹ کے منظور کر لیا گیا، جو سماجی، انسانی اور ثقافتی مسائل سے متعلق ہے۔

قرارداد، جسے پاکستان 1981 سے اسپانسر کر رہا ہے، دنیا کی توجہ ان لوگوں پر مرکوز کرنے کا کام کرتا ہے جو اب بھی اپنے ناقابل تنسیخ حق خودارادیت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں، جن میں بھارت کے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر اور فلسطین کے لوگ بھی شامل ہیں۔

یہ اگلے ماہ جنرل اسمبلی کی توثیق کے لیے آنے کی توقع ہے۔

اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل نمائندے منیر اکرم نے مسودے کا تعارف کراتے ہوئے کہا کہ اب بھی ایسے حالات موجود ہیں جہاں مقبوضہ لوگوں کو منظم طریقے سے ان کے حق خود ارادیت سے محروم کیا جا رہا ہے اور وہ اس کے حصول کے لیے جدوجہد کرنے پر مجبور ہیں۔

انہوں نے کہا کہ قابض طاقتیں ان لوگوں کی جائز جدوجہد کو دبانے کے لیے اکثر وحشیانہ اور پرتشدد ہوتی ہیں۔

دریں اثنا، اے پی پی سے گفتگو کرتے ہوئے اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر منیر اکرم نے کہا کہ اقوام متحدہ کے پینل کی طرف سے منظور کی گئی پاکستان کی حمایت میں قرارداد غیر ملکی قبضے کا شکار لوگوں کے حق خودارادیت کو برقرار رکھنے کے لیے ہندوستانی عوام کے لیے امید کی کرن ہے۔ کشمیر پر ناجائز قبضہ

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button