حکام ڈینگی سے نمٹنے کے لیے مزید ڈاکٹرز، پیرا میڈیکس چاہتے ہیں۔

راولپنڈی میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد عمر نے راولپنڈی میں ڈینگی کے مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافے سے نمٹنے کے لیے پنجاب حکومت سے مزید 100 ڈاکٹرز، 50 نرسز، 50 پیرا میڈیکس اور مزید بیڈز کا مطالبہ کیا ہے۔

راولپنڈی کے ہسپتالوں میں اسلام آباد سے بھی بڑی تعداد میں مریض لائے جا رہے ہیں۔ راولپنڈی کے تین بڑے اسپتالوں کے ڈینگی وارڈز میں پچاس فیصد بیڈ مریضوں سے بھرے پڑے ہیں۔ روزانہ کی بنیاد پر ڈینگی کے 100 کے قریب مشتبہ مریض ہسپتالوں میں آتے ہیں۔

اس وقت ان ہسپتالوں میں 217 بستروں پر قبضہ ہے۔ بینظیر بھٹو جنرل ہسپتال، ہولی فیملی ہسپتال، اور ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال اس وقت اسلام آباد سے 51، اٹک سے دو، ہری پور سے دو، کراچی ایسٹ سے ایک، پونچھ سے ایک اور راولپنڈی سے 160 مریضوں کی دیکھ بھال کر رہے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے انسداد ڈینگی مہم کو تیز کرنے اور ہسپتالوں میں ڈینگی کے مریضوں کا علاج یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button