ثقلین نے تیسرے ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان کی شکست کو کم کر دیا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ، ثقلین مشتاق نے ہر پاکستانی کو تیار رہنے کی ضرورت پر زور دیا کیونکہ "جیتنا اور ہارنا کھیل کا حصہ ہے۔”

سات میچوں کی سیریز کے تیسرے ٹی ٹوئنٹی کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ہیڈ کوچ نے کہا کہ یہ قدرت کا نظام ہے کہ ہم کبھی کبھی جیتتے ہیں اور ہار بھی جاتے ہیں۔

مڈل آرڈر کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ پاکستانی ٹیم کا مڈل آرڈر ہے یہ ہمارا ہے اور ہمیں اسے سپورٹ کرنا ہے۔

ثقلین نے کہا کہ مڈل آرڈر کے بارے میں اتنی کثرت سے بات کر کے آپ ہمارے ذہنوں کو متاثر کر رہے ہیں۔ مڈل آرڈر کا بار بار حوالہ دے کر آپ اس انداز سے کھلاڑیوں کے اعتماد کو مجروح کر رہے ہیں۔ انہوں نے ہر پاکستانی کو کپتان، کوچ اور کھلاڑیوں پر اعتماد بحال کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

ہیڈ کوچ نے کہا کہ پاکستان نے کل فتح حاصل کی، اور انہوں نے (انگلینڈ) نے آج کامیابی حاصل کی، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ٹیم جیتے گی جس کے منصوبے کام کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی ٹیم بہترین دستیاب کھلاڑیوں پر مشتمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے کھلاڑیوں پر اعتماد ہونا چاہیے۔ تاہم، کچھ خدشات ہیں، اور انہیں دور کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں، انہوں نے کہا۔

ثقلین نے کہا کہ انگلینڈ کی سیریز کے تیسرے میچ میں پاکستانی باؤلنگ میں کافی کمی نظر آئی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے گیند بازوں نے بہت غلطیاں کیں۔ ہمارے منصوبے بھی اچھے نہیں تھے۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button