ایپل نے مانگ میں کمی کے ساتھ آئی فون کی پیداوار کو بڑھانے کا منصوبہ چھوڑ دیا۔

منگل کو بلومبرگ نیوز نے اس معاملے سے واقف لوگوں کے حوالے سے رپورٹ کیا کہ ایپل انکارپوریشن اس سال اپنے نئے آئی فونز کی پیداوار بڑھانے کے منصوبے کو ترک کر رہی ہے جب کہ طلب میں متوقع اضافہ پورا نہ ہو سکا۔

بلومبرگ نے رپورٹ کیا کہ کمپنی نے سپلائی کرنے والوں سے کہا کہ وہ اس سال کے دوسرے نصف حصے میں اپنے فلیگ شپ آئی فون 14 پروڈکٹ فیملی کی اسمبلی کو چھ ملین یونٹس تک بڑھانے کی کوششوں کو کم کریں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس کے بجائے، کپرٹینو، کیلیفورنیا میں واقع ہیڈ کوارٹر کمپنی اس مدت کے لیے 90 ملین ہینڈ سیٹس تیار کرنے کا ارادہ رکھے گی، جو تقریباً ایک سال پہلے کے برابر ہے اور اس موسم گرما میں ایپل کی اصل پیش گوئی کے مطابق ہے۔

ایپل نے فوری طور پر تبصرہ کے لئے رائٹرز کی درخواست کا جواب نہیں دیا۔

بلومبرگ نے رپورٹ کیا کہ زیادہ قیمت والے آئی فون 14 پرو ماڈلز کی مانگ انٹری لیول ورژنز کی نسبت زیادہ مضبوط ہے اور کم از کم ایک ایپل فراہم کنندہ پیداواری صلاحیت کو کم قیمت والے آئی فونز سے پریمیم ماڈلز میں منتقل کر رہا ہے۔

ایپل نے اس ہفتے کہا تھا کہ وہ آئی فون 14 کی مینوفیکچرنگ شروع کرے گا، جو اس مہینے کے شروع میں ہندوستان میں لانچ کیا گیا تھا، کیونکہ ٹیک دیو اپنی کچھ پیداوار کو چین سے دور لے جاتا ہے۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button