نیپرا نے کے الیکٹرک کے بجلی کے نرخوں میں 4 روپے 87 پیسے کمی کردی

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی نے جمعرات کو کے الیکٹرک کے صارفین کے لیے اگست 2022 کے لیے فیول چارجز ایڈجسٹمنٹ (FCA) کی مد میں 4.87 روپے فی یونٹ کمی کی منظوری دے دی۔

نیپرا میں کے الیکٹرک کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی درخواست کی سماعت پاور ریگولیٹر کے چیئرمین توصیف ایچ فاروقی کی زیر صدارت ہوئی۔

ایک بیان میں چیئرمین نے کہا کہ بجلی کے نرخوں میں کمی سے کے الیکٹرک کے صارفین کو 7 ارب روپے سے زائد کا ریلیف ملے گا۔

نیپرا نے کہا کہ کے الیکٹرک کی اپنی بجلی کی پیداوار کی لاگت تقریباً 38 روپے فی یونٹ ہے اور وہ 13 روپے 61 پیسے فی یونٹ کے حساب سے بجلی خریدتا ہے۔ اس لیے پاور یوٹیلیٹی کو پروڈیوسر سے 24 روپے فی یونٹ سستی بجلی مل رہی ہے۔

کے ای حکام نے چیئرمین کو بتایا کہ پیداواری لاگت کو کم کرنے کے لیے پاور ڈسٹری بیوٹر قابل تجدید توانائی اور گیس کی پیداوار بڑھانے کا ارادہ رکھتا ہے۔ چیئرمین نے بتایا کہ حکومت اس وقت 15 روپے فی یونٹ سبسڈی دیتی ہے۔

فاروقی نے کہا، "کے ای کو سستی پیداوار بڑھانے کے لیے ریگولیٹر کو اپنے اقدامات سے آگاہ کرنا چاہیے۔”

اس ماہ کے شروع میں، نیپرا نے جولائی 2022 کی فیول لاگت ایڈجسٹمنٹ کی مد میں K-Electric (KE) کے صارفین کے لیے بجلی کے نرخوں میں 4.12 روپے فی یونٹ کمی کی منظوری دی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button