احتساب کے نظام پر مریم نواز کی بریت کا طمانچہ شریفوں کو نشانہ بنانے کے لیے استعمال ہوتا تھا، وزیراعظم

ایون فیلڈ کیس میں بریت کے بعد وزیراعظم شہباز شریف نے مریم نواز کو مبارکباد دی۔  اسکرین گریب
ایون فیلڈ کیس میں بریت کے بعد وزیراعظم شہباز شریف نے مریم نواز کو مبارکباد دی۔ اسکرین گریب

اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف نے جمعرات کو ملک کے احتسابی نظام پر تنقید کی جو مبینہ طور پر مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی ایون فیلڈ کرپشن کیس میں بری ہونے کے بعد شریف خاندان کو نشانہ بنانے کے لیے استعمال کیا گیا تھا۔

وزیر اعظم نے اسلام آباد ہائی کورٹ (IHC) کے فیصلے کے بعد مسلم لیگ (ن) کی رہنما کی سزا کے خلاف درخواست کو قبول کرنے کے بعد ٹویٹر پر کیا۔

جھوٹ، بہتان اور کردار کشی کی عمارت آج منہدم ہو چکی ہے۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کی بریت نام نہاد احتسابی نظام کے منہ پر طمانچہ ہے جو شریف خاندان کو نشانہ بنانے کے لیے استعمال کیا گیا تھا،‘‘ وزیراعظم نے اپنی بھانجی اور ان کے شوہر صفدر کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا۔

احتساب عدالت نے ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو 10 سال قید کے ساتھ 80 لاکھ پاؤنڈ جرمانے، مریم کو 7 سال قید اور جرمانے کے ساتھ کیپٹن (ر) صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنادی 6 جولائی 2018۔

قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ (ن) کی رہنما پر ان کے والد اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کو جرم میں ملوث کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل اسلام آباد ہائی کورٹ کے دو رکنی بینچ نے ان کی درخواست پر سماعت کی اور فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ سنایا۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ نیب ملزمان کے خلاف مقدمہ ثابت کرنے میں ناکام رہا۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button