وزیر خزانہ نے ایف بی آر کو ٹیکس وصولی میں کوششیں بڑھانے کا مشورہ دیا۔

وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو مشورہ دیا ہے کہ ٹیکس وصولی میں اپنی کوششیں بڑھائیں تاکہ ٹیکس کو جی ڈی پی کے تناسب سے 15 فیصد تک لایا جا سکے۔

یہ بات انہوں نے جمعرات کو اسلام آباد میں ایف بی آر کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔

چیئرمین ایف بی آر عاصم احمد نے بریفنگ میں بتایا کہ ایف بی آر نے جولائی اور اگست 2022 کے ماہانہ اہداف کامیابی سے حاصل کر لیے ہیں اور اس ماہ تک سہ ماہی ہدف بھی حاصل کر لے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ کارکردگی ستمبر کے مہینے میں سیلاب کی وجہ سے معیشت کی سست روی، درآمدات میں کمی اور ملک میں مہنگائی کی وجہ سے مطالبات کے سکڑنے کے ساتھ ساتھ پیٹرولیم مصنوعات پر کوئی سیلز ٹیکس عائد نہ ہونے کے باوجود ہے۔

وزیر خزانہ نے اہداف کے حصول میں ایف بی آر کی ٹیم کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے ٹیم کو یہ بھی یقینی بنایا کہ وہ ان کے ساتھ زیادہ سے زیادہ مصروف رہیں گے اور ان کے فرائض کی انجام دہی کے لیے تعاون کریں گے۔ انہوں نے ایف بی آر کی ٹیم کو مشورہ دیا کہ وہ اقتصادی نقطہ نظر میں فوری تبدیلیوں کے لیے خود کو پوزیشن میں لے۔

مجموعی طور پر، وزیر خزانہ نے امیروں پر ٹیکس لگانے کے لیے اس سال کیے گئے اہم ٹیکس اقدامات کے ذریعے ٹیکسوں کے کل حصہ میں براہ راست ٹیکسوں کے حصہ کو گزشتہ سال کے مقابلے میں بڑھانے کے حوالے سے ایف بی آر کی جانب سے کیے گئے اچھے کام کو سراہا۔

وزیر خزانہ نے ٹیکس پالیسیاں وضع کرنے اور ریونیو اکٹھا کرنے کی کوششوں میں ٹیکس دہندگان کی شمولیت کی اہمیت کو بھی اجاگر کیا۔

اجلاس میں ایف بی آر کی اعلیٰ قیادت نے شرکت کی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button