روس نے یوکرین کے ساتھ الحاق سے متعلق اقوام متحدہ کی قرارداد کو ویٹو کر دیا، چین نے انکار کر دیا۔

Urdupoint_2

روس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اپنے ویٹو کا استعمال کرتے ہوئے اس قرارداد کے مسودے کو مسترد کر دیا ہے جس میں یوکرائنی علاقے کے اس کے الحاق کی مذمت کی گئی تھی۔

لیکن یہاں تک کہ ماسکو کے قریبی دوست چین اور ہندوستان نے بھی یوکرین میں کریملن کے تازہ ترین اقدامات کی مذمت کرنے والی قرارداد کے خلاف ووٹ دینے کے بجائے پرہیز کا انتخاب کیا۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ میں امریکی سفیر لنڈا تھامس گرین فیلڈ نے جمعہ کو سلامتی کونسل کے اجلاس میں قرارداد پیش کی جس میں رکن ممالک سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ یوکرین کی کسی بھی بدلی ہوئی حیثیت کو تسلیم نہ کریں اور روس کو اپنی فوجیں واپس بلانے کا پابند کیا جائے۔

اس سے قبل، دوسری جنگ عظیم کے بعد یورپ میں سب سے بڑا الحاق اس وقت کیا گیا جب روسی صدر ولادیمیر پوتن نے یوکرین کے 15 فیصد علاقے پر مشتمل چار خطوں پر روسی حکمرانی کا اعلان کیا۔

امریکہ اور البانیہ کی مشترکہ سرپرستی میں قرارداد میں یوکرین کے روس کے زیر قبضہ علاقوں میں منعقدہ "غیر قانونی” ریفرنڈم کی مذمت اور تمام ریاستوں سے یوکرین کی سرحدوں میں کسی تبدیلی کو تسلیم نہ کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

قرارداد میں روس سے یوکرین سے فوری طور پر فوجیوں کو واپس بلانے کا مطالبہ بھی کیا گیا، 24 فروری کو شروع کیے گئے حملے کو ختم کیا جائے۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button