رانا ثناء اللہ نے آڈیو لیکس میں ملوث افراد کی نشاندہی کر دی۔

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ۔  - اے پی پی/فائل
وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ۔ – اے پی پی/فائل

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے پیر کو انکشاف کیا ہے کہ آڈیو لیکس میں ملوث افراد کی نشاندہی کر لی گئی ہے۔

وزیر نے بتایا کہ جب کہ بگنگ کا کوئی نشان نہیں تھا، ٹیلی فون ہیک ہو گئے ہیں۔

دوران خطاب جیو نیوز شو "آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ”، وزیر نے کہا کہ تحقیقات وزیر اعظم شہباز شریف اور قومی سلامتی کمیٹی کے فیصلے کے بعد ہو رہی ہیں۔

ثناء اللہ کے مطابق رپورٹ پہلے وزیراعظم کو پیش کی جائے گی اور پھر اس کی نشریات کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔

وزیر نے کہا کہ آڈیو لیکس کا معاملہ کسی ایجنسی سے متعلق نہیں ہے، بلکہ یہ چند لوگوں کا معاملہ ہے، جن کی نشاندہی کی گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان افراد کا تعلق وزیراعظم ہاؤس کے عملے سے ہے۔ کچھ لوگ ایسے کام مالی فائدہ کے لیے کرتے ہیں۔

ابتدائی تفتیش کے مطابق، ثناء اللہ نے کہا کہ یہ کوئی بگاڑ نہیں تھا۔ درحقیقت، فون ٹیپنگ منظر عام پر آئی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والی ملاقاتوں کی آڈیو سامنے آئی تھیں جس کے بعد ہاؤس کی سیکیورٹی پر سوالات اٹھائے گئے تھے۔

قومی سلامتی کمیٹی نے آڈیو لیکس کی تحقیقات کے لیے اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی کے قیام کی بھی منظوری دے دی ہے جس کے بعد ثناء اللہ کی سربراہی میں 12 رکنی اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی تحقیقات کر رہی ہے۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button