کشمیری رہنما الطاف احمد شاہ بھارتی قید میں انتقال کر گئے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق، کل جماعتی حریت کانفرنس (اے پی ایچ سی) کے مقتول رہنما سید علی گیلانی کے داماد الطاف احمد شاہ منگل کو بھارتی حراست میں انتقال کر گئے۔

وہ 2017 میں اپنی گرفتاری کے بعد نئی دہلی کی بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں تھے، جہاں انہوں نے پیر کی رات ایمس اسپتال، نئی دہلی میں آخری سانس لی۔

وہ گردوں کے کینسر کی آخری سٹیج میں مبتلا تھے۔

30 ستمبر کو ان کی بیٹی رووا شاہ نے ایک ٹویٹ میں بتایا کہ انہیں گردوں کے کینسر کی تشخیص ہوئی ہے، جو ان کے اہم اعضاء میں پھیل چکا ہے۔

انہوں نے اپنے پورے خاندان کی جانب سے وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر داخلہ امیت شاہ سمیت ہندوستانی حکام سے درخواست کی کہ وہ صحت کی بنیاد پر ان کی ضمانت کی درخواست پر غور کریں تاکہ وہ ان کا علاج کر سکیں۔

اے پی ایچ سی نے ہندوستانی حکومت پر بھی زور دیا تھا کہ وہ انسانی بنیادوں پر شاہ کو ضمانت پر رہا کرے۔

تاہم مودی حکومت نے اجازت نہیں دی۔

الطاف احمد نے حریت رہنما سید علی گیلانی کے ساتھ قریب سے کام کیا، جن کا گزشتہ سال ایک دہائی سے زائد گھر میں نظربند رہنے کے دوران انتقال ہوگیا۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button