حکومت نے بھارت سے 6.2 ملین مچھر دانی خریدنے کی منظوری دے دی۔

حکومت پاکستان نے بھارت سے مچھر دانی منگوانے کا فیصلہ کر لیا۔  تصویر: اے ایف پی/فائل
حکومت پاکستان نے بھارت سے مچھر دانی منگوانے کا فیصلہ کر لیا۔ تصویر: اے ایف پی/فائل

اسلام آباد: عوام کو ویکٹر برن سے بچانے کی کوششوں کے حصے کے طور پر بیماریاں تباہ کن سیلاب کے بعد، وفاقی حکومت نے منگل کو وزارت صحت کو بھارت سے 6.2 ملین مچھر دانیاں منگوانے کی منظوری دے دی۔

محکمہ صحت کے حکام نے بتایا کہ عالمی فنڈ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کو پاکستان میں سیلاب متاثرین کے لیے بھارت سے مچھر دانیاں منگوانے کے لیے مالی وسائل فراہم کرے گا۔

حکام نے کہا کہ وہ جلد از جلد نیٹ حاصل کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں اور امید ہے کہ یہ واہگہ کے راستے نومبر کے وسط تک حاصل کر لیے جائیں گے۔

"ملیریا ملک کے 32 سیلاب سے متاثرہ اضلاع میں تیزی سے پھیل رہا ہے جہاں ہزاروں بچے مچھروں سے پھیلنے والی بیماری سے متاثر ہیں،” انہوں نے مزید کہا کہ انہیں اس کے علاج میں مشکلات کا سامنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سیلاب زدہ علاقوں میں ملیریا صحت عامہ کا ایک بڑا مسئلہ بن کر ابھرا ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق وزارت صحت نے گزشتہ ماہ بھارت سے مچھر دانی منگوانے کی اجازت مانگی تھی۔

اہلکار نے زور دے کر کہا کہ انہوں نے سندھ، پنجاب اور بلوچستان کے 26 سب سے زیادہ متاثرہ اضلاع کے لیے مچھر دانی کے انتظام کے لیے گلوبل فنڈ سے درخواست کی تھی، جہاں پلازموڈیم فالسیپیرم کے کیسز بہت زیادہ تھے اور اس کے جواب میں گلوبل فنڈ نے بھارت سے یہ جالیاں منگوانے کی پیشکش کی۔ اگر حکومت پاکستان اپنی حریف پڑوسی ریاست سے خریداری کی اجازت دیتی ہے۔

“ہم نے بھارت سے مچھر دانی کی خریداری کی اجازت دینے کے لیے وزارت تجارت کو خط لکھا ہے۔ اگر اجازت دی گئی تو، گلوبل فنڈ نے ہمیں چند دنوں کے اندر مچھر دانی کی مطلوبہ تعداد کا بندوبست کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے،‘‘ ایک اہلکار نے اس وقت شیئر کیا تھا جب وزارت سے رابطہ کیا گیا تھا۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button