کراچی والے اپنے مسائل کو بڑھا چڑھا کر پیش کرتے ہیں: سعید غنی

سندھ کے وزیر تعلیم و محنت سعید غنی۔  - ٹویٹر
سندھ کے وزیر تعلیم و محنت سعید غنی۔ – ٹویٹر

سندھ کے وزیر محنت سعید غنی انہوں نے شہر کو درپیش مسائل کا ذمہ دار کراچی کے لوگوں کو ٹھہراتے ہوئے کہا کہ کراچی والے اپنے مسائل کو بڑھا چڑھا کر پیش کرتے ہیں۔

غنی نے کہا، "کراچی کے شہری اپنے مسائل کے بارے میں بات کرتے ہوئے 100 گنا بڑھا دیتے ہیں۔”

وزیر مملکت نے شہریوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کراچی دنیا کا واحد شہر ہے جہاں لوگ خود سیوریج لائنیں بلاک کرتے ہیں، پانی کے کنکشن پنکچر کرتے ہیں اور اسٹریٹ لائٹس کو پھاڑ دیتے ہیں۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ان کے پاس اس بیان کی حمایت کے ثبوت بھی ہیں لیکن انہوں نے مسائل کے حل کے بارے میں کوئی بات نہیں کی اور نہ ہی یہ مسائل پیدا کرنے والوں کے خلاف کوئی کارروائی کرنے کی بات کی۔

2022 میں کراچی میں اسٹریٹ کرائمز آسمان کو چھونے لگے

وزیر کا یہ بیان 56,500 سے زائد کیسز کے طور پر سامنے آیا ہے۔ اسٹریٹ کرائم کراچی میں رواں سال کے دوران رپورٹ ہوئے ہیں۔

شہریوں سے 19 ہزار سے زائد موبائل فون چھین لیے گئے، 104 کاریں زبردستی چھین لی گئیں اور 1383 موٹر سائیکلیں چوری کی گئیں۔

شہر میں مختلف وارداتوں کے دوران 35 ہزار کے قریب شہریوں کو موٹر سائیکلوں سے محروم کر دیا گیا۔

دوسری جانب اسٹریٹ کرمنلز کے خلاف مزاحمت کرتے ہوئے کم از کم 56 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں اور 269 زخمی ہوئے ہیں۔ کراچی میں بھی گھروں میں ڈکیتی کی 303 کے قریب وارداتیں ہوئیں۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button