سہ فریقی سیریز: نواز کی تیز رفتار 45 نے پاکستان کو بنگلہ دیش کو شکست دینے میں مدد کی۔

محمد رضوان اور کپتان بابر اعظم کی شاندار نصف سنچریوں سے قبل محمد نواز نے 20 میں ناقابل شکست 45 رنز بنا کر سہ فریقی سیریز کے ایک سنسنی خیز اختتامی کھیل میں پاکستان نے بنگلہ دیش کو سات وکٹوں سے شکست دینے میں مدد کی۔

174 کے قابل احترام ہدف کا تعاقب کرنے کے لیے مقرر، قابل اعتماد جوڑی، بابر اعظم اور محمد رضوان نے پاکستان کو کمانڈنگ پوزیشن میں لانے کے لیے سنچری اوپننگ اسٹینڈ کے ساتھ مضبوط بنیاد رکھی۔

نمبر 4 پر بیٹنگ کرتے ہوئے، نواز نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے پانچ چوکے اور ایک چھکا لگا کر اپنی ٹیم کو گھر پہنچا دیا۔

اس سے قبل، کپتان شکیب الحسن اور لٹن داس نے شاندار نصف سنچریاں اسکور کیں جب انہوں نے چوتھی وکٹ کے لیے 88 رنز کی شاندار شراکت کے ساتھ پاکستانی باؤلنگ اٹیک کے ذریعے بنگلہ دیش کو 173/6 کا قابل احترام ٹوٹل بنانے میں مدد دی۔

داس نے 42 میں 69 رنز بنائے، چھ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے، جب کہ شکیب نے 42 میں 68 رنز بنائے، جس میں تین چھکوں اور سات چوکوں شامل تھے، جیسا کہ اس جوڑی نے بنگلہ دیش کی بیٹنگ کو لنگر انداز کیا جب وہ 6ویں اوور میں 41/2 پر پھسل گئے۔

ٹاس جیتنے کے بعد پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے، بنگلہ دیش نے اپنی اننگز کا مایوس کن آغاز کیا کیونکہ اوپنر سومیا سرکار تیسرے اوور میں تیز گیند باز نسیم شاہ کے ہاتھوں 4 کے سکور پر سستے میں گر گئے، اس سے پہلے کہ محمد وسیم نے نجم الحسن شانتو کو چھڑا لیا۔

شکیب نے اس کے بعد داس کے ساتھ بہترین انداز میں جوڑ دیا کیونکہ انہوں نے درمیانی اوورز میں اسکور بورڈ کو متاثر کن رفتار سے آگے بڑھایا اور 15 ویں اوور میں مجموعی اسکور کو 129 تک پہنچا دیا اس سے پہلے کہ بعد میں نواز کو بڑا مارتے ہوئے ہٹا دیا گیا۔

تاہم گرین شرٹس نے ڈیتھ اوورز میں واپسی کرتے ہوئے صرف 12 رنز کی پیشکش کی جبکہ آخری دو اوورز میں تین وکٹیں حاصل کیں۔

پاکستان کی جانب سے نسیم اور وسیم نے دو دو وکٹیں حاصل کیں جبکہ نواز نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button