شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ اس نے جوہری صلاحیت کے حامل دو کروز میزائلوں کا تجربہ کیا ہے۔

شمالی کوریا نے طویل فاصلے تک مار کرنے والے اسٹریٹجک کروز میزائلوں کے ایک جوڑے کا تجربہ کیا ہے، جس کے رہنما کم جونگ اُن نے ملک کی ٹیکٹیکل جوہری حملے کی صلاحیت کے ایک اور کامیاب نمائش کی تعریف کی۔

شمالی کوریا کے ذرائع ابلاغ کے مطابق، بدھ کو ہونے والے اس تجربے کا مقصد کوریا کی پیپلز آرمی میں تعینات کروز میزائلوں کی "جنگی کارکردگی اور طاقت کو بڑھانا” تھا۔

یہ ہتھیاروں کے لانچوں کے سلسلے میں تازہ ترین تھا جس نے منقسم کوریائی جزیرہ نما پر تناؤ بڑھا دیا ہے اور اس خدشے کو بڑھا دیا ہے کہ پیانگ یانگ پانچ سالوں میں اپنا پہلا جوہری تجربہ کرنے والا ہے۔

شمالی کوریا کے میڈیا کے مطابق کروز میزائلوں نے سمندر کے اوپر 2,000 کلومیٹر (1,240 میل) کا فاصلہ طے کیا، جس کا کہنا ہے کہ میزائلوں نے اپنے مطلوبہ، لیکن غیر متعینہ اہداف کو نشانہ بنایا۔

اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ یہ تجربہ "دشمنوں” کے لیے ایک اور واضح انتباہ ہے، کم نے کہا کہ ملک کو "جوہری اسٹریٹجک مسلح افواج کے آپریشنل دائرہ کار میں توسیع جاری رکھنی چاہیے تاکہ کسی بھی وقت کسی بھی اہم فوجی بحران اور جنگی بحران کو پوری طرح سے روکا جا سکے۔ یہ”، شمالی کوریا کے میڈیا کے مطابق۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button