جنوب مشرقی آسٹریلیا میں شدید بارشوں نے سیلاب کی وارننگ جاری کر دی ہے۔

Urdupoint_2

جنوب مشرقی آسٹریلیا میں سیلاب کی وارننگ جاری کر دی گئی ہے جہاں شدید بارشوں کے باعث ہزاروں گھر بجلی سے محروم ہو گئے ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق سڈنی کے مغرب میں واقع نیو ساؤتھ ویلز کے شہر فوربس میں سینکڑوں لوگوں کو بڑے سیلاب سے قبل جمعرات کی رات تک اپنے گھر خالی کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔

آسٹریلیا کی سب سے زیادہ آبادی والی ریاستوں، نیو ساؤتھ ویلز اور وکٹوریہ، اور جزیرے کی ریاست تسمانیہ میں ندیاں خطرناک حد تک بڑھ رہی تھیں اور کئی مہینوں کی اوسط سے زیادہ بارشوں کی وجہ سے پانی بھیگ گیا تھا۔

ریاستی ایمرجنسی سروس نے 17 گلیوں کے لیے ایک حکم جاری کیا جس میں مرکزی شہر کے علاقے سمیت 8 بجے (0900 GMT) کو خالی کر دیا جائے، جس میں دریائے لچلان میں جمعہ تک 10.6 میٹر کی بڑی سیلابی چوٹی تک پہنچنے کی توقع ہے۔

پولیس نے بتایا کہ سڈنی کے مغرب میں نیو ساؤتھ ویلز کے شہر ہلسٹن کے قریب ایک شخص کے لاپتہ ہونے کی اطلاع ملی ہے۔

پولیس نے بتایا کہ اسے آخری بار دریائے لچلان پر دیہی جائیداد پر دیکھا گیا تھا۔

پولیس کو منگل کے روز سڈنی کے مغرب میں واقع شہر باتھرسٹ کے قریب سیلابی پانی میں ڈوبی ہوئی کار میں ایک 46 سالہ شخص کی لاش ملی۔

اردو پوائنٹ 2

اردو پوائنٹ 2 پاکستان کو بہترین نیوز پبلیشر سنٹر یے۔ یہاں آپ پاکستانی خبریں، انٹرنیشنل خبریں، ٹیکنالوجی، شوبز، اسلام، سیاست، اور بھی بہیت کہچھ پڑھ سکتے ہیں۔

مزیز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button